How much is your pocket | تمھارا جیب کترا

How much is your pocket

How much is your pocket | تمھارا جیب کترا
How much is your pocket | تمھارا جیب کترا

How honest were the pockets of old-fashioned puppies!

Got off the bus and put his hand in his pocket I was shocked. The pocket was cut. What was in the pocket? Total 9 rupees and a letter I wrote to my mother saying, "Mommy, I lost my job and will not be able to send money yet."

For three days he was lying in a postcard pocket, not wanting to post. Nine rupees were paid. So nine rupees was no big money. But for the one who lost his job, there are not less than nine hundred.

A few days Mother's letter received. Before reading I went to sleep. Must have written to send money. But I was surprised to read the letter!

The mother wrote: "Son! You received a money order of fifty rupees. How good is it Ray - never hesitates to send money". I've been in that rugged bin for several days, who finally sent the money to mom ...?

A few days later another letter was received. "Brother nine bucks for you, and forty-eight bucks, I sent a money order to your mom. Don't worry, mommy is the same for everyone! Why are they hungry?
How much is your pocket

تمھارا جیب کترا


پرانے دور کے جیب کترے کتنے ایماندار تھے

بس سے اتر کر جیب میں ہاتھ ڈالا۔ میں چونک پڑا ۔ جیب کٹ چکی تھی ۔ جیب میں تھا بھی کیا؟ ٹوٹل 9 روپے اور ایک خط جو میں نے ماں کو لکھا تھا کہ "ماں ! میری نوکری چھوٹ گئی ہے ابھی پیسے نہیں بھیج پاؤں گا"۔

تین دنوں سے وہ پوسٹ کارڈ جیب میں پڑا تھا، پوسٹ کرنے کا دل نہیں چاہ رہا تھا ۔ نو روپئے جاچکے تھے ۔ یوں نو روپئے کوئی بڑی رقم نہیں تھی ۔ لیکن جس کی نوکری چھوٹ گئی ہو اُس کے لیے نو سو سے کم بھی تو نہیں ہوتی ہے ۔

کچھ دن گزرے ۔ ماں کا خط ملا ۔ پڑھنے سے پہلے میں سہم گیا ۔ ضرور پیسے بھیجنے کو لکھا ہوگا ۔ لیکن خط پڑھ کر میں حیران رہ گیا !

ماں نے لکھا تھا: "بیٹا ! تیرا بھیجا پچاس روپئے کا منی آرڈر ملا ۔ تو کتنا اچھا ہے رے ۔۔۔ پیسے بھیجنے میں ذرا کوتاہی نہیں کرتا" ۔ میں کافی دنوں تک اس اُدھیڑ بُن میں رہا کہ آخر ماں کو پیسے کس نے بھیجے۔۔۔۔؟

کچھ دن بعد ایک اور خط ملا۔ "بھائی نو روپئے تمھارے، اور اکتالیس روپئے اپنے ملا کر میں نے تمھاری ماں کو منی آرڈر بھیج دیا ہے ۔ فکر نہ کرنا، ماں تو سب کی ایک جیسی ہوتی ہے نا ! وہ کیوں بھوکی رہے؟

تمھارا جیب کترا

Post a Comment

0 Comments